August 13th, 2020 (1441ذو الحجة23)

نظریہ پاکستان اور اسلام سے ہم آہنگ یکساں نظام تعلیم ملک کی ضرورت ہے،دردانہ صدیقی 


جماعت اسلامی پاکستان حلقہ خواتین کی مرکزی سیکرٹری جنرل دردانہ صدیقی نے جامعتہ المحصنات لاہور کی تقریب تقسیم اسناد سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ تعلیمی اداروں کا ملک و ملت کی تعمیر میں بڑا کردار ہوتا ہے، اساتذہ کسی بھی معاشرے میں انقلاب برپا کرنے میں اہم کردار ادا کرتے ہیں، اسلامی فلاحی ریاست قائم ہونے سے بھی پہلے نبی کریم نے تعلیم کا نظام قائم کیا۔ انہوں نے مزید کہا کہ بدقسمتی سے بیرونی غلامی کے پیروکار نصاب میں سے قرآن و حدیث کو نکالنے کی یکے بعد دیگرے کوششیں کرتے رہتے ہیں مگر عوام ایسی کوئی سازش کامیاب نہیں ہونے دیں گے۔۔ دردانہ صدیقی نے کہا کہ اللہ نے امامت کا دامن علم سے جوڑا، نبی کریم صلی اللہ وسلم نے صحابہ کے حصول تعلیم کوترجیح دی اور ان اصحاب نے آگے چل کر اسلامی ریاست کی باگ دوڑ سنبھالی۔ لارڈ میکالے کے نظام تعلیم نے ہمیں ذہنی غلامی کے شکنجے میں دھکیل دیا، جبکہ قادیانیوں کے لئے راہ ہموار کرنے کے لئے بھی نصاب پر حملے جاری ہیں۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ عورت آزادی مارچ، سوشلزم کے نام پر آج سیکولرازم کے مردے میں دوبارہ جان ڈالی جارہی ہے یہ سارے مسترد شدہ اور آزمائے ہوئے نظریے اور نظام ہیں اب اسلام کی باری ہے، خود کو اس بڑی ذمہ داری کے لئے تیار کریں۔ انہوں نے کہا کہ پانچ اگست سے ہماری شہ رگ کشمیر بھارت کے کرفیو میں ہے، وادی کو انسانی جیل بنادیا گیا، لیکن کشمیر ایشو کو پس پردہ ڈالنے کے لئے روز کوئی نہ کوئی نان ایشو کو ایشو بناکر ادھر توجہ مبذول کرادی جاتی ہے۔ تقریب میں کامیاب طالبات کو اسناد و انعامات سے نوازا گیا ۔